سپریم کورٹ کراچی رجسٹری

User avatar
kandwal
Posts: 160
Joined: December 13th, 2020, 6:11 pm
Location: islamabad

سپریم کورٹ کراچی رجسٹری

Post by kandwal »

‎کنٹونمنٹ بورڈز میں عسکری اداروں کی جانب سے کمرشل تعمیرات کا معاملہ

‎سپریم کورٹ نے کارساز, شاہراہ فیصل, راشد منہاس روڈ پر قائم تمام شادی ہالز گرانے کا حکم دے دیا

‎کالاپل پر قائم گلوبل مارکی سمیت کنٹونمنٹ ایریاز میں تمام سنیماز, کمرشل پلازے, مارکیٹس گرانے کا بھی حکم

‎کیا فوجیوں کا کام شادیاں کرانا ہے, جسٹس گلزار احمد برہم

‎فوج کو کیا ہو گیا ہے, کن کاموں میں پڑ گئے, جسٹس گلزار احمد

‎عدالت نے اٹارنی جنرل, تمام کنٹونمنٹ بورڈز کے چیف ایگزیکٹوز اور منتخب چئیرمینز کو طلب کر لیا

‎اے ایس ایف, کے پی ٹی, پی آئی اے, سول ایوی ایشن, سمیت تمام اداروں کے سربراہان بھی طلب

‎تمام اداروں کے سربراہان سے 2 ہفتے میں رپورٹ طلب

‎ایک میجر بیٹھ کر مرضی کے فیصلے کرتا ہے, جسٹس گلزار احمد

‎شاہراہ فیصل پر دیواریں گرانے میں مشکل اس لیے ائی کیونکہ وہ ایک میجر کی خواہش پر بنی تھیں, جسٹس گلزار احمد

‎ایک میجر بیٹھ جاتا ہے اور جو اس کا دل چاہتا ہے کرتا ہے, جسٹس گلزار احمد

‎میجر کی خواہش تھی کہ دیواریں بنا کر اشتہارات سے آمدنی حاصل کریں, جسٹس گلزار احمد

‎کیا ڈی ایچ اے والے سمندر کو امریکہ سے ملانا چاہتے ہیں, جسٹس گلزار احمد

‎وفاقی نہ صوبائی یہاں حکومت ڈی ایچ اے والے کر رہے ہیں, جسٹس گلزار احمد

‎لاہور میں تو ڈی ایچ اے نے اتنی عمارتیں بنا ڈالیں بھارت تک جا پہنچے ہیں, جسٹس گلزار احمد برہم

‎کیا ان کا کام یہی رہ گیا ہے, جسٹس گلزار احمد
‎ڈی ایچ اے والے سمندر کو بھی بیچ رہے ہیں, جسٹس گلزار احمد

‎ان کا بس چلے تو یہ سڑکوں پر بھی شادی ہالز بنا ڈالیں, جسٹس گلزار احمد

‎نیوی اور ائیرفورس کے اسلحہ کے قریب شادی ہالز بن رہے ہیں, جسٹس گلزار احمد

‎مہران بیس جہاں حملہ ہوا وہاں بھی شادی ہالز چل رہے ہیں, جسٹس گلزار احمد

‎اسلحہ ڈپو کے قریب کس طرح شادی ہالز بن سکتے ہیں, یہ کر کیا رہے ہیں, جسٹس گلزار احمد


Pakistan Affairs MCQs Series